PK Press

یہ لانگ مارچ نہیں فرلانگ مارچ ہے،مولانافضل الرحمان

پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ جس کے پاس اختیار ہے وہی آرمی چیف کی تعیناتی کرے گا۔
سکھر میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ 2014 میں 120 کا دھرنا دیا گیا جس کی وجہ سے چینی صدر کا دورہ ملتوی ہوا اور اب سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کو اپنا دورہ ملتوی کرنا پڑا۔
انہوں نے کہا کہ اہم تعیناتی معمول کا عمل ہے، اپنی مرضی کی تعیناتی کا مطالبہ عجیب ہے کیونکہ کل ہو کوئی اپنی مارضی کی تعیناتی چاہئے گا، لہٰذا فیصلہ کسی کی مرضی سے نہیں بلکہ آئین کے مطابق ہوگا۔
پی ڈی ایم سربراہ نے کہا کہ حکومتی اتحادی جماعتیں ٹیم کی طرح کام کررہی ہیں، چیلنجز سے نمٹنے کے لئے مل کر کوششیں کرنا ہوں گی جب کہ عوامی رابطہ مہم کے لئے مختلف صوبوں میں جا رہے ہیں۔
مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ یہ لانگ مارچ نہیں فرلانگ مارچ ہے، انہوں نے ماضی کے مارچ میں بھی فساد پھیلایا، ان کا مقصد اسلام آباد میں امن خراب کرنا ہے، البتہ ہمارا مارچ انتہائی پُر امن تھا۔
ان کا مزید کہنا تھا کہ مشکل معاشی حالات سے باہر آگئے ہیں،معیشت کی بہتری کی جانب سفر کا آغاز ہوگیا ہے، پہلے روپے کی قدرایک جگہ ٹھہر نہیں رہی تھی مگر اب ڈالر اور پیٹرول کی قیمتوں میں استحکام آیا ہے۔

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

پاکستان میں سونے کی فی تولہ قیمت میں اضافہ ہوگیا

پڑھنے کے اگلے

سیب کا حلوابنانے کا طریقہ

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے