PK Press

عالمی برادری کی جا نب سے توانائی کی منتقلی کو فروغ دینے میں چین کی کوششوں کی تحسین

چین کے کاربن پیک کے اقدامات کاربن اخراج میں نمایاں کمی کا موجب ہوں گے، چینی نما ئندہ
بیجنگ:
کاپ 27 کےدوران چائنا کارنر میں "توانائی کے نظام میں کاربن نیوٹرل کے چیلنجز اور حل اور چین کے انرجی ٹرانزیشن آؤٹ لک 2023: کاپ 27 خصوصی رپورٹ” کے اجرا کی تقریب منعقد ہوئی۔ جمعہ کے روز چینی میڈ یا کے مطا بق صدر شی جن پھنگ کے خصوصی نمائندے اور موسمیاتی تبدیلی کے لیے چین کے خصوصی ایلچی شے جن ہوا، ڈنمارک کے وزیر توانائی و آب و ہوا ڈین جورگنسن اور بین الاقوامی توانائی ایجنسی کی ڈپٹی ایڈمنسٹریٹر میری واروک نے تقریب میں شرکت کی اور تقاریر کیں۔
شے جن ہوا نے اپنے خطاب میں کہا کہ چین کے کاربن پیک اور کاربن نیوٹرل کے اقدامات ،دنیا میں کاربن اخراج میں نمایاں ترین کمی کا موجب ہوں گےاور اس کے لیے سخت کوششوں کی ضرورت ہے۔
ڈنمارک کے وزیر توانائی و آب و ہوا ڈین جورگنسن اور بین الاقوامی توانائی ایجنسی کی ڈپٹی ایڈمنسٹریٹر میری واروک نے توانائی کی منتقلی کو فروغ دینے میں چین کی کوششوں کو سراہا۔

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

چینی صدر کی جاپانی وزیر اعظم فومیو کیشیدا سے ملاقات

پڑھنے کے اگلے

چین کی خاتون اول پھنگ لی یوان کا تھائی لینڈ کے نیشنل آرٹ میوزیم کا دورہ

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے