PK Press

خیبر میں سکیورٹی فورسز کا آپریشن، اہم دہشت گرد کمانڈر ہلاک، سپاہی شہید

خیبر میں سکیورٹی فورسز کی کارروائی کے دوران اہم دہشتگرد ہلاک ہوگیا جب کہ اس دوران پاک فوج کے ایک جوان نے بھی جام شہادت نوش کیا ہے۔
آئی ایس پی آر کے مطابق خیبر پختونخوا کے قبائلی ضلع خیبر کے علاقے شاکس میں دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع پرآپریشن کیا گیا۔
آپریشن کے دوران سیکیورٹی فورسز اوردہشت گردوں کے درمیان شدید فائرنگ کا تبادلہ ہوا اوراہم دہشت گرد کمانڈر لیاقت علی عرف شاہین مارا گیا۔
کارروائی کے دوران پاک فوج کا ایک سپاہی سلیم خان بھی شہید ہوا۔ 28 سالہ شہید سلیم خان کا تعلق صوابی سے تھا۔
آئی ایس پی آر کے مطابق مارا گیا دہشت گرد سکیورٹی فورسز پر حملوں، ٹارگٹ کلنگ اور بھتہ خوری میں ملوث تھا، ہلاک دہشت گرد کے قبضے سے سے بھاری تعداد میں اسلحہ اور گولہ بارود بھی برآمد ہوا ہے۔
ترجمان پاک فوج کے مطابق مارے گئے دہشت گرد کے بارے میں کافی عرصے سے جبری لاپتہ شخص ہونے پروپیگنڈا کیا جاتا رہا ہے۔ 25 جون کو لیاقت کے بھائی نے اس کی جبری گمشدگی سے متعلق پشاور ہائی کورٹ میں رٹ پٹیشن دائر کی تھی اور الزام لگایا کہ اس کے بھائی کو 21 دسمبر کوسکیورٹی فورسز نے حراست میں لیا تھا۔

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

عمران خان پر حملہ:ایف آئی آر سپریم کورٹ میں جمع،پراسیکیوشن کمیٹی قائم

پڑھنے کے اگلے

ویٹ لینڈز کے تحفظ کے لیے عالمی اقدامات کو فروغ دینا چاہیے، چینی صدر

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے