PK Press

خاتون جج کو دھمکیوں کا کیس: عمران خان نے عدالت میں معافی مانگ لی

خاتون جج کو دھمکی دینے سے متعلق توہین عدالت کیس میں چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے اسلام آباد ہائیکورٹ میں معافی مانگ لی۔
خاتون جج جو دھمکی دینے کا معاملہ، سابق وزیر اعظم عمران خان کیخلاف توہین عدالت کیس کی سماعت ہوئی ۔ چیف جسٹس اطہر من اللہ کی سربراہی میں پانچ رکنی لارجر بینچ سماعت کی ۔
بینچ میں جسٹس محسن اختر کیانی، جسٹس بابر ستار، جسٹس طارق محمود جہانگیری، جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب شامل ہیں۔
چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیے کہ آج ہم صرف فرد جرم عائد کریں گے،
عمران خان کے وکیل حامد خان نے کہا کہ اس سے پہلے ملزم عمران خان کچھ کہنا چاہتے ہیں،
سابق وزیر اعظم عمران خان روسٹرم پر آگئے۔
عمران خان نے کہا کہ جیسے جیسے مقدمہ آگے چلا، مجھے سنجیدگی کا احساس ہوا، میں نے خاتون جج کیخلاف لیگل ایکشن کی بات کی تھی،
اگر آپ کہیں تو خاتون جج کے پاس جا کر یقین دلاں گا کہ نہ میں، نہ میری پارٹی آپ کو نقصان پہنچائے گی،
چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیے کہ ہم چارج فریم نہیں کر رہے، عدالت نے عمران خان کو بیان حلفی جمع کرانے کا حکم دے دیا۔
چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ آپ کے بیان حلفی کو ہم consider کریں گے، آج چارج فریم نہیں کر رہے،بیان حلفی جمع کرائیں، ہم دیکھیں گے، پھر آگے کی کارروائی کریں گے،سابق وزیر اعظم عمران خان کیخلاف توہین عدالت مقدمے کی آئندہ سماعت کی تاریخ 29ستمبر سے تبدیل کر کے 3اکتوبر کردی گئی ،توہین عدالت مقدمے کی آئندہ سماعت 3 اکتوبر کو ہوگی۔29 ستمبر کو مریم نواز کی پیشی کے باعث تاریخ تبدیل کی گئی ہے۔

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

اوورسیز پاکستانیوں کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کئے جائیں،راجہ شکیل حیدر

پڑھنے کے اگلے

سپریم کورٹ کا پی ٹی آئی کو ایک بار پھر قومی اسمبلی میں واپسی کا مشورہ

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔