PK Press

تمباکو پر عائد کیا گیا36 ارب روپے کا ٹیکس خوش آئندہ ہے۔ ذیشان دانش

tobacco tax

ٹیکس عائد کرنے سے تمباکو مصنوعات تک رسائی مشکل ہوگی جس سے صحت کے بجٹ پر بوجھ کم ہو گا۔ نیشنل کوآرڈینیٹر سی ٹی سی پاک ۔

اسلام آباد ( ) صدارتی آرڈیننس کے مطابق تمباکو اور سگریٹ پر عائد کردہ 36 ارب روپے کے ٹیکس خوش آئندہ ہیں ۔ تمباکو کی فی کلو قیمت 10 روپے سے 390 روپے فی کلو کرنے اور برانڈڈ سگریٹ پر ڈیوٹی میں اضافہ کے اقدام کو سراہتے ہیں اور امید کرتے ہیں کہ حکومت اس قیمت میں کمی نہیں کرے گی۔ تمباکو کی قیمت میں اضافہ کے باعث سگریٹ اور دوسری تمباکو مصنوعات عوام کی قوت خرید سے باہر ہو جائیں گی اور شنید ہے کہ اس سے تمباکو مصنوعات کے استعمال میں کمی آئے گی جس کے باعث ملک کے صحت کے بجٹ پر اضافی بوجھ ہلکا ہو گا، سالانہ تمباکو کے باعث ہونے والی اموات کی تعداد میں کمی ہو گی اور نئے استعمال کرنے والوں کی حوصلہ شکنی ہو گی۔ حکومت کا یہ اقدام قابل تعریف ہے۔
قیمت میں اضافے کے ساتھ ساتھ باقی شعبہ جات میں بھی حکومت کو تمباکو انڈسٹری کی حوصلہ شکنی کرنی چاہیے کیونکہ اس کی کاشت کے باعث ماحولیات پر بھی برے اثرات مرتب ہوتے ہیں جن میں بڑے پیمانے پر پانی کا استعمال، جنگلات کی کٹائی، ہوا اور پانی کے نظام کی آلودگی شامل ہیں۔ایک ترقی پذیر ملک ہونے کے ناطے، تمباکو ہمیں دوسرے محاذوں پر بھی نقصان پہنچاتا ہے جس میں خوراک کا عدم تحفظ بھی شامل ہے ۔

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

شہباز گل کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا مسترد، جیل بھیجنے کا حکم

پڑھنے کے اگلے

سندھ میں بارش اور سیلاب سے تباہی:سول حکومت کی مدد کیلئے فوج کی خدمات طلب

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔