PK Press

لبنان میں تارکین وطن کی کشتی ڈوب گئی، 9 افراد ہلاک

لبنان کے ساحل کے قریب تارکین وطن کی کشتی ڈوبنے کا افسوس ناک واقعہ پیش آیا ہے تاہم 47 افراد کو زندہ بچا لیا گیا۔لبنان میں ریڈ کراس کے ادارے کے مطابق جب کشتی شمالی بندرگاہی شہر طرابلس کے قریب ڈوبی تو اس پر کم از کم 56 افراد سوار تھے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق طرابلس کے ساحل نزدیک ایک چھوٹے سے جزیرے کے پاس سے 8 افراد کی لاشیں مل گئی ہیں۔اِس سے پیشتر لبنان کے فوجی حکام نے اعلان کیا تھا کہ 47 تارکینِ وطن کو بچا لیا گیا ہے جبکہ ایک نوجوان لڑکی کی لاش بھی برآمد کر لی گئی ہے۔ فوجی حکام کے مطابق کشتی بلند لہروں کی وجہ سے الٹ گئی جس پر گنجائش سے زیادہ افراد سوار تھے۔فوجی حکام کے مطابق زیادہ تر افراد کو موقع پر ہی طبی امداد دی گئی جبکہ کچھ افراد کو ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔ ایک مشتبہ شخص کو حراست میں بھی لیا گیا ہے جس پر شک ہے کہ وہ انسانی اسمگلر ہے اور وہی اِن افراد کو لے جا رہا تھا۔واضح رہے کہ لبنان اپنی حالیہ تاریخ کے بد ترین معاشی بحران کی لپیٹ میں ہے۔ اکتوبر 2019 میں معاشی بحران شروع ہونے کے بعد سے ہزاروں لوگ یورپ میں بہتر زندگی کی امید لیے کشتیوں کے ذریعے لبنان چھوڑنے کی کوشش کر چکے ہیں۔اِن تارکین وطن میں سے کچھ کامیاب بھی ہو جاتے ہیں جبکہ اکثریت انسانی اسمگلروں کو ہزاروں ڈالر ادا کرنے کے باوجود بھی ناکام رہتی ہے۔ گزشتہ تین برسوں میں سینکڑوں افراد بے رحم سمندری لہروں کا شکار بن کر جانیں گنوا چکے ہیں۔

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

آئی ایم ایف سے مذاکرات، ڈالر کی قیمت میں بڑی کمی

پڑھنے کے اگلے

نوازشریف کو پاسپورٹ جاری کردیا گیا

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔