PK Press

اسلام آباد ہائیکورٹ کا شہبازگل اورشہزاداکبرکا نام اسٹاپ لسٹ سے نکالنے کا حکم

اسلام آباد ہائیکورٹ نے شہباز گل اورشہزاد اکبرکا نام اسٹاپ لسٹ سے نکالنے اوردونوں شخصیات کوہراساں نہ کرنے کا حکم دیا ہے۔

 

 

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے اسٹاپ لسٹ میں نام ڈالنے کے خلاف پی ٹی آئی رہنماوں شہباز گل اورشہزاد اکبرکی درخواست کی سماعت کی۔ایف آئی اے اور وزارت داخلہ کے حکام عدالت میں پیش ہوئے۔ایف آئی اے حکام نے عدالت کوبتایا کہ 8 اپریل کواے ڈی ایمگریشن کوایک خط ملا تھا۔ غیرمعمولی صورتحال کے تناظرمیں ان کا نام اسٹاپ لسٹ میں شامل کیا گیا۔شہزاد اکبراورشہباز گل کیخلاف انکوائریز زیرالتوا ہیں۔ ان پر اختیارات سے تجاوز اور آمدن سے زائد اثاثے بنانے کی انکوائری ہے۔

 

شہزاد اکبر اور شہباز گل کا نام سٹاپ لسٹ میں ڈالنے کا نوٹیفیکشن معطل.

https://pkpress.net/2022/04/12/ihc-3/

 

چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے استفسارکیا کہ کیا مارشل لا لگ گیا تھا۔ ایف آئی اے کب سے اتنی آزاد ہوگئی کہ حکومتی لوگوں کیخلاف انکوائری شروع کردی۔ایف آئی اے کے کنڈکٹ کو2سال سے آبزرو کررہے ہیں۔ اسٹاپ لسٹ میں نام ڈالنے کے لئے کون سا قانون موجود ہے۔ اپنی کنڈکٹ سے اپنے آپ کو شرمندہ نہ کریں۔عدالت کا مزید کہنا تھا کہ ایف آئی اے سمجھ لے یہ طریقے پرانے ہوچکے ہیں۔ عدالت اس وقت بھی کہتی رہی ہے کہ ایف آئی اے عام شہریوں کی خدمت کے لئے ہے۔ کسی عام آدمی سے پوچھ لیں جواسٹوری بتا رہے ہیں اس پریقین نہیں کیا جاسکتا۔عدالت نے وزارت داخلہ سے رپورٹ طلب کرتے ہوئے سماعت پیر تک ملتوی کردی۔

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

رنبیر اور عالیہ کی شادی میں جوتاچھپائی کی رسم کی تفصیلا ت سامنے آگئیں

پڑھنے کے اگلے

سردار تنویرالیاس آزاد کشمیر میں وزارت عظمیٰ کے امیدوار نامزد

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔