PK Press

قومی اسمبلی اجلاس، چودھری سالک اورطارق بشیرچیمہ اپوزیشن بینچوں پربیٹھ گئے

tariq bashir cheema

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک )قومی اسمبلی کااجلاس آج جب شروع ہواتو حکومتی اتحادی جماعت مسلم (ق )کے رہنما چودھری سالک حسین اورطارق بشیرچیمہ اپوزیشن بینچوں پربیٹھ گئے۔تفصیلات کے مطابق بلاول بھٹوسمیت اپوزیشن کے بہت سے رہنمائوں نے چوہدری سالک حسین اورطارق بشیرچیمہ سے اس دوران ملاقات کی ۔

 

فوادچودھری کی اسمبلی ایوان میں سعدرفیق سے خوش گپیاں

https://pkpress.net/2022/04/09/national-assembly-2/

دوسری جانب سپریم کورٹ کی طرف سے ڈپٹی اسپیکر کی رولنگ کو غیر آئینی قرار دیے جانے کے بعد قومی اسمبلی کا اہم اجلاس شروع ہو گیا ہے۔سپیکر اسد قیصر کی زیر صدارت ہونے والے قومی اجلاس کا باقاعدہ آغاز تلاوت قرآن پاک سے ہوا جس کے بعد نعت رسول مقبول ۖ پڑھی گئی اور پھر قومی ترانہ پڑھا گیا۔اہم اجلاس کے لیے ممبران قومی اسمبلی ایوان میں اپنی نشستوں پر براجمان ہو چکے ہیں، قومی اسمبلی اجلاس میں حکومت کے 51 ارکان موجود ہیں تاہم وزیراعظم عمران خان ابھی تک اسمبلی ہال نہیں پہنچے ہیں۔اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کا اجلاس کی صدارت شروع کرتے ہوئے کہنا تھا سپریم کورٹ کے فیصلے کے مطابق من و عن کارروائی کروں گا۔شہباز شریف کا قومی اسمبلی اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہنا تھا کہ آج پارلیمان آئینی و قانونی طریقے سے ایک سلیکٹڈ وزیراعظم کو شکست فاش دینے جا رہا ہے۔

 

 

 

انہوں نے کہا کہ اگر یہ لوگ سازش کی بات کریں گے تو بات بہت دور تک جائے گی اور ہم ان کو ننگا کریں گے۔قائد حزب اختلاف نے سپریم کورٹ کا فیصلہ پڑھتے ہوئے اسپیکر قومی اسمبلی سے کہا کہ آپ عدالتی حکم کے مطابق تحریک عدم اعتماد کی کارروائی کو آگے بڑھائیں۔شاہ محمود قریشی نے کہا کہ تحریک کو پیش کرنا اپوزیشن کا حق اور اس کا دفاع کرنا ہمارا حق ہے، قوم کو گواہ بنانا چاہتا ہوں کہ آئین کا احترام ہم سب پر لازم ہے۔وزیراعظم نے قوم سے خطاب میں کہا کہ وہ عدالتی فیصلے سے مایوس لیکن بوجھل دل کے ساتھ فیصلے کو تسلیم کرتے ہیں، پاکستان کی تاریخ آئین شکنی سے بھری پڑی ہے، 12 اکتوبر 1999 کو آئین شکنی ہوئی اور تاریخ اس بات کی گواہ ہے۔

https://www.express.pk/

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

امریکا نے ایک مرتبہ پھر وزیراعظم عمران خان کے الزامات کو مسترد کردیا

پڑھنے کے اگلے

کرس راک کو تھپڑ ول سمتھ کو مہنگا پڑ گیا

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔