PK Press

پاکستان کی امریکہ سے بہترین تعلقات کی طویل تاریخ ہے،آرمی چیف

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک )پاکستان کی فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ امریکہ پاکستان کی سب سے بڑی ایکسپورٹ مارکیٹ ہے۔ ہمارے اس کے ساتھ بہترین تعلقات کی لمبی تاریخ ہے۔ ہم چین اور امریکہ دونوں سے اچھے تعلقات بڑھانا چاہتے ہیں۔

سکیورٹی ڈائیلاگ

ہفتہ کو اسلام آباد سکیورٹی ڈائیلاگ سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان اہم اقتصادی خطے میں واقع ہے، شہریوں کی خوشحالی اور سلامتی ہماری اولین ترجیح ہے۔ مقاصد کے حصول کے لیے ملک کے اندر اور خطے میں امن کی ضرورت ہوتی ہے۔

 

 

آرمی چیف نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف بڑی اور اہم کامیابیاں حاصل کیں۔ آخری دہشت گرد کے خاتمے تک کوششیں جاری رکھیں گے۔سربراہ پاک فوج نے افغانستان کے حالات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ دنیا یوکرین کے بحران پر توجہ وقت لاکھوں افغانوں کو نظرانداز نہ کرے۔ افغان حکومت کی موجودہ حالت تسلی بخش نہیں مگر ہمیں تحمل کی ضرورت ہے۔آرمی چیف کا کہنا تھا کہ افغانستان میں حکومت کے حالات تسلی بخش نہیں مگر دنیا کو تحمل دکھانے کی ضرورت ہے اور یوکرین کے بحران کی وجہ سے معاشی مشکلات کے شکار لاکھوں افغانوں کو نہیں بھولنا چاہیے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں رجسٹر اور غیر رجسٹرڈ افغان مہاجرین کی تعداد 40 لاکھ کے لگ بھگ ہے۔

 

 

آرمی چیف نے مشرقی سرحد کی صورتحال پر کہا کہ لائن آف کنٹرول پر حالات بہتر ہیں اور وہاں بسنے والے شہریوں کے لیے کی زندگی میں امن آیا ہے۔انہوں نے کہا کہ انڈین سپر سونک میزائل کے پاکستان میں گرنے کا واقعہ انتہائی تشویشناک ہے، عالمی برادری اس کا نوٹس لے گی کیونکہ اس سے یہاں عام شہریوں کا جانی نقصان بھی ہو سکتا تھا جبکہ اس میزائل کے راستے میں آنے والا کوئی مسافر طیارہ بھی نشانہ بن سکتا تھا۔

https://pkpress.net/2022/04/01/imran-khan-8/

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

رضوان صادق کے صاحبزادے کی شادی سیاسی اجتماع میں تبدیل

پڑھنے کے اگلے

نالہ لئی منحوس ہے جب بھی کام کرنے لگتا ہوں حکومت تبدیل ہو جاتی ہے

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔