PK Press

چین کا کسی بھی دھمکی اور دباؤ کو قبول نہ کر نے کا اعلان

 چین کے وزیرخارجہ وانگ ای نے کہا ہے کہ چین کسی بھی دھمکی اور دباؤ کو قبول نہیں کرتا ہے اور اپنے خلاف بے بنیاد الزامات اور شکوک و شبہات کی مخالفت کرتا ہے۔ چینی وزیر خا رجہ نے ہفتہ کے روز ایک انٹرویو دیتے ہوئے یوکرین کے معاملات پر چین اور امریکہ کے صدور کی بات چیت کے بارے میں تفصیلات بیان کیں۔

 

 

وانگ ای نے کہا کہ چین کے صدر مملکت شی جن پھنگ نے یوکرین کے معاملات پر چین کے موقف کو واضح کیا ہے جس کے ذریعے یہ پیغام دیا گیا ہے کہ چین ہمیشہ دنیا کے امن کی حفاظت میں اہم کردار ادا کرتاہے اور اس کا موقف ” امن کی حفاظت اور جنگ کی مخالفت” ہے۔ چین حقائق کے مطابق حقیقت پسندانہ رویے سے کام لے گا۔وانگ ای نے اس بات پر زور دیا کہ صدر شی جن پھنگ نے یوکرین بحران کے حل کے لیے چین کی تجاویز بھی پیش کیں۔ اولین ترجیح یہ ہے کہ متعلقہ فریقوں کے درمیان مذاکرات کروانے کی کوشش کی جائے اور جلد از جلد جنگ بندی کی جائے تاکہ جانی نقصانات سے بچا جائے۔ جب کہ طویل مدتی حل یہ ہے کہ سردجنگ کے نظریات کو ترک کیا جائے اور علاقائی سلامتی کا متوازن، موثر اور پائیدار ڈھانچہ تشکیل دیا جائے، تب ہی یورپ میں طویل مدتی امن و استحکام قائم رہے گا۔وانگ ای نے کہا کہ چین کا موقف بیشتر ممالک کی خواہشات سے مطابقت رکھتا ہے اور تاریخ یہ ثابت کرے گی کہ چین کا موقف درست ہے۔

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

راجہ صاحب کا گڑ

پڑھنے کے اگلے

شین وارن کے بچوں کے والد کی میت کو چومنے کے جذباتی مناظر

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔