PK Press

جتنی بہتری ہم پاکستان میں لائے ہیں تاریخ میں کبھی نہیں آئی،وزیراعظم

اسلام آباد(نیوزڈیسک ) وزیراعظم عمران خان نے اپوزیشن جماعتوں کو مناظرے کا چیلنج دیتے ہوئے کہا ہے کہ جتنی بہتری ہم پاکستان میں لے آئے ہیں تاریخ میں کبھی نہیں آئی ،اپوزیشن کسی بھی چیز میں ہمارا مقابلہ کرے ،ہم ہر چیز میں ان سے آگے ہیں ،پی پی دور میں زیادہ مہنگائی تھی ، پہلی بار یکساں تعلیمی نصاب لائے ، نچلے طبقے کو ترقی دی ، ہیلتھ کارڈ لے کرآئے،پچاس سال بعد پاکستان میں ڈیمز بننے جا رہے ہیں ،ڈاکووں کے ٹولے کو ڈر ہے کہ ان کی دکانیں بند ہوجائیں گی۔کہا ہے کہ اپوزیشن کا شکریہ ادا کرتا ہوں انہوں نے میری پوری پارٹی کو کھڑا کردیا ہے،لوگوں کو ٹماٹر اور پیاز کی قیمت بھلا دی ہیں
تفصیلات کے مطابق منگل کو پی ٹی آئی اوورسیز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ اعتماد کیا تو لوگ دیکھ رہے ہیں کہ ایک طرف نوازشریف اور شہبازشریف ہیں، لوگ کہہ رہے ہیں کہ اگر تھری سٹوجز نے ملک کو بچانا ہے تو بہتر ہے عمران خان کے ساتھ ڈوب جاو۔انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کا دل سے شکریہ ادا کرتا ہو ں کہ انہوں نے لوگوں کو ٹماٹر اور پیاز کی قیمتیں بھلا دی ہیں ۔انہوں نے کہا کہنے عدم اعتماد کیا تو لوگ دیکھ رہے ہیں کہ ایک طرف نوازشریف اور شہبازشریف ہیں،

https://www.express.pk/

 نوازشریف کیسے اقتدار میں آیا

وزیراعظم نے کہا کہ زرداری جعلی پرچہ بناکر صدر بن گیا،ان کی صرف عدم اعتماد نہیں ان کا 2023کا الیکشن بھی گیا،یہ غلط فہمی میں پڑ گئے ہیں کہ لوگ مشکل وقت میں ان کرپشن بھول گئے ہیں، انہوں نے کبھی محنت نہیں کی، ہم تو جدوجہد کرکے آئے ہیں، انہوں نے محنت نہیں کی، انہیں باہر سے اٹھا کر لایا گیا،نوازشریف جنرل جیلانی کی چھتوں پر سریا لگاتے ہوئے اقتدار میں آئے،ساڑھے تین سے تنگ آگیا تھا کہ کل حکومت گئی آج گئی،فضل الرحمان کی پارٹی سمجھتی ہے کہ ن لیگ اور پیپلزپارٹی چور ہیں، ن لیگ نےفضل الرحمان کا نام ڈیزل رکھا تھا میں نے نہیں۔وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ مہنگائی کا سمندر ہے، سارا وقت ہم پر بوجھ پڑا رہتا تھا اور ہم سارا وقت سوچتے تھے کہ کیا کریں،

ٹماٹر اور پیاز کی قیمتیں

آج میں اپوزیشن جماعتوں کا دل سے شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں کہ انہوں نے لوگوں کو ٹماٹر اور پیاز کی قیمتیں بھلا دیں، ان کی وجہ سے میری جماعت اکٹھی ہوگئی، اپوزیشن نے مجھ پر احسان کیا اب انہیں برا بھلا نہیں کہوں گا۔انہوں نے کہا کہ نواز شریف جنرل جیلانی کی چھتوں پر سریا لگاتے لگاتے وزیراعلیٰ بنا، فضل الرحمان تیس سال سے دین بیچ رہا ہے، فضل الرحمان کا نام ہم نے نہیں بلکہ ن لیگ کے ایک رنگ باز نے فضل الرحمان کا نام ڈیزل رکھا اور وہ اس لیے کہ فضل الرحمان ڈیزل کے پرمٹ کے نام پر پیسے بناتا تھا، پیپلز پارٹی، ن لیگ اور فضل الرحمان ایک دوسرے کو چور کہتے تھے اور اب یہ ’’تھری اسٹوجیز‘‘ میرے خلاف جمع ہوگئے ہیں۔وزیراعظم نے کہا کہ امریکا اپنے ملک میں بمباری اور ڈرون کی اجازت نہیں دیتا اور ہمارے ملک پر ڈرون حملے کیے جس میں کتنے بے گناہ مارے گئے جب کہ حکمران کچھ نہیں بولتے تھے جو کہ پیسے کے غلام ہیں، یہ لوگ اپنا پیسہ بچانے کے لیے ملک بیچ دیں گے، میں امریکا، برطانیہ اور بھارت کا مخالف نہیں، میں کسی ملک کے خلاف نہیں بلکہ اس کی پالیسیوں کے خلاف ہوں۔انہوں نے کہا کہ ڈان لیکس میں ن لیگ نے بھارت کو پیغام دیا کہ ہماری فوج غلط ہے اور نواز شریف آپ کے ساتھ ہے، اس وقت کے آرمی چیف راحیل شریف جنہیں دشمن قرار دیتے نواز شریف انہیں دوست کہتے تھے، فوج طاقت ور نہ ہوتی تو ملک کے ٹکڑے ہوجاتے۔

ڈیزل

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ فضل الرحمٰن کی پارٹی سمجھتی ہے کہ پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ (ن) چور ہے، مسلم لیگ (ن) سمجھتی ہے کہ پیپلزپارٹی چور اور فضل الرحمٰن ڈیزل ہے، پیپلزپارٹی نواز شریف کو چور اس کو ڈیزل سمجھتی ہے۔انہوں نے کہا کہ جب یہ تینوں اکٹھے ہوئے ہیں تو میں ان کا شکریہ اس لیے ادا کرنا چاہتا ہوں کہ ساری قوم نے دیکھا ہے کہ اگر انہوں نے ملک کو بچانا ہے تو بہتر ہے کہ عمران خان کے ساتھ ڈوب جاؤ۔ان کا کہنا تھا کہ لہٰذا بہت بہت شکریہ، اس ملک میں یہ اللہ کا خاص کرم ہوا کہ یہ تینوں اکٹھے ہوگئے اور انہوں نے میرے خلاف عدم اعتماد کی تحریک لانے کا فیصلہ کیا۔وزیراعظم نے کہا کہ میں اس دن دو نفل پڑھ کر اللہ کا شکر ادا کیا، اس لیے کیا کہ جب حکومت آئی ہے، ساڑھے تین سال میں تنگ آگیا تھا کہ کل حکومت گئی، پرسوں حکومت گئی، آج گئی، نااہل ہے، سلیکٹڈ ہے، تو اب یہ تینوں نے اکٹھے ہو کر جو کیا ہے، یہ تینوں اب کپتان کی بندوق کی نشست کے بیچ آگئے ہیں۔

https://pkpress.net/2022/03/14/maulana-fazal-ur-rehman-2/

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

پی آئی اے کا عمرہ زائرین کے لیے کرایوں میں کمی کا اعلان

پڑھنے کے اگلے

اسلامو فوبیا کے خلاف عالمی دن منانے کی قرارداد جنرل اسمبلی سے منظور

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔