PK Press

ایف اے ٹی ایف کا پاکستان کو جون تک گرے لسٹ میں برقرار رکھنے کا فیصلہ

 فنانشنل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف)نے پاکستان کو گرے لسٹ میں برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔تفصیلات کے مطابق پاکستان ممکنہ طور پر اس سال جون تک گرے لسٹ میں رہے گا۔

ایف اے ٹی ایف کے اعلامیہ کے مطابق پاکستان نے 27 میں سے 26شرائط پوری کرلی ہیں۔پاکستان نے اقوام متحدہ کے نامزد دہشتگرد گروپوں اور افراد کے خلاف سخت پابندیاں عائد کیں۔پاکستان نے دہشتگردی کی فنانسنگ روکنے کیلئے خاطر خواہ پیشرفت کی ہے۔پاکستان نے جرائم سے حاصل رقوم کا پھیلاو روکنے اور قبضے میں لینے میں کامیابی حاصل کی ہے۔

فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کے اعلامیہ کے مطابق،پاکستان کو منی لانڈرنگ قوانین پر سختی سے عمل درآمد کرنا ہوگا۔ رئیل اسٹیٹ کے ذریعے منی لانڈرنگ کی روک تھام کرنا ہوگی۔ایف اے ٹی ایف کا اجلاس 4دن تک پیرس میں جاری رہا جس کے بعد فیصلہ کیا گیا۔

 عالمی سطح پر منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی مالی معاونت کی روک تھام کے نگراں ادارے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) نے متحدہ عرب امارات (یو اے ای)کو بھی گرے لسٹ میں شامل کر لیا ہے۔ایف اے ٹی ایف کے مطابق متحدہ عرب امارات ایف اے ٹی ایف کے ایکشن پلان کو نافذ کرنے کے لیے کام کرے گا۔ایف اے ٹی ایف نے تسلیم کیا ہے کہ اماراتی حکومت منی لانڈرنگ اور دہشت گردوں کی مالی معاونت روکنے کے لیے اقدامات کر رہی ہے۔دوسری جانب متحدہ عرب امارات کی حکومت کا کہنا ہے کہ امارات کو گرے لسٹ سے نکالنے کے لیے ایف اے ٹی ایف کے ساتھ کام کر رہے ہیں۔متحدہ عرب امارات کی حکومت کا یہ بھی کہنا ہے کہ معیشت میں مشکوک لین دین کی نشاندہی پر پیش رفت جاری ہے۔

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

آسٹریلیا کے لیجنڈری لیگ سپنر شین وارن انتقال کرگئے

پڑھنے کے اگلے

شدت پسندی منبر،سکول اور تھانہ کے کردار ادا نہ کرنے کا نتیجہ ہے،فواد چوہدری

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔