PK Press

پارلیمنٹ حملہ کیس میں عارف علوی کی صدارتی استثنیٰ ختم کرنے کی درخواست

پارلیمنٹ حملہ کیس میں عارف علوی کی صدارتی استثنیٰ ختم کرنے کی درخواست

پارلیمنٹ حملہ کیس

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک )صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی پارلیمنٹ حملہ کیس میں انسداد دہشتگردی کی عدالت میں پیش ہوئے

تفصیلات کے مطابق جمعہ کو انسداد دہشتگردی کی عدالت کے جج محمد علی وڑائچ نے پارلیمنٹ حملہ کیس کی سماعت کی جس سلسلے میں صدر مملکت اپنے وکیل بابر اعوان کے ہمراہ عدالت پہنچے۔

صدارتی استثنیٰ نہ لینے کی درخواست

صدر مملکت نے عدالت میں پیشی کے موقع پر صدارتی استثنیٰ نہ لینے کی درخواست جمع کرادی۔صدر مملکت نے کہا کہ میں نے اسلامی تاریخ کا مطالعہ کرنے کی کوشش کی، استثنیٰ کی گنجائش نہیں، آئین پاکستان کا پابند ہوں، قرآن پاک اس سے بڑا آئین ہے، مجھے آئین پاکستان استثنی دیتا ہے مگرمیں یہ استثنیٰ نہیں لینا چاہتا، جتنے خلفا ًآئے وہ عدالتوں میں بڑے باوقارانداز سے پیش ہوئے۔

عدلیہ سے درخواست ہے کہ جلدی فیصلے ہوں

https://pkpress.net/

انہوںنے کہا کہ 2016 میں مجھ پرچارج لگا تھا، اسی عدالت سے ضمانت بھی لی تھی، پوری عدلیہ سے درخواست ہے کہ جلدی فیصلے ہوں کیونکہ مقدمہ ہوتا ہے اورپھر ان کی نسلیں یہ کیس چلاتی ہیں، میرے والد نے 1977 میں مقدمہ کیا تھا، وہ بھی آج تک چل رہا ہے۔صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی اپنی گاڑی خود چلا کر واپس روانہ ہوگئے۔صدرِ مملکت کی آمد سے پہلے کوئی اضافی سکیورٹی، نفری یا روٹ نہیں لگایا گیا۔

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

شعبان کا چاند نظر نہیں آیا،شب برآ ت کب ہوگی؟

پڑھنے کے اگلے

پاکستان میں فیس بک استعمال کرنے والوں کیلئے بڑی خوشخبری

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔