PK Press

عالمی طاقتیں دور کھڑی دیکھ رہی ہیں،ہمیں اپنے دفاع کے لیے ‘تن تنہا چھوڑ دیا گیا ہے

عالمی طاقتیں دور کھڑی دیکھ رہی ہیں،ہمیں اپنے دفاع کے لیے 'تن تنہا چھوڑ دیا گیا ہے

یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی نے شکوہ کیا ہے کہ عالمی طاقتیں دور کھڑی دیکھ رہی ہیں، ہم آج بھی اپنا دفاع تن تنہا کر رہے ہیں۔یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی نے اپنے ایک بیان میں بتایا کہ روس کے ساتھ پہلے روز کی لڑائی میں 137 افراد ہلاک ہوئے۔

 

ولادیمیر زیلنسکی نے کہا کہ یورپ کے 27 رہنماوں سے پوچھا یوکرین نیٹو میں شامل ہو گا؟ ہر کوئی ڈرتا ہے اور جواب نہیں دیتا لیکن ہم ڈرنے والے نہیں ہیں۔صدر ولادیمیر زیلنسکی کا کہنا ہے کہ روس سے لڑنے کے لیے یوکرین کو تنہا چھوڑ دیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ملک کے دفاع کے لئے کسی بھی اقدام سے گریز نہیں کریں گے۔

 

عالمی برادری کوروس پرحملے روکنے کے لئے دباو ڈالنا چاہئیے۔دوسری جانب یوکرین نے 18سے 60برس کی عمر کے مردوں کے ملک چھوڑنے پر پابندی عائد کر دی ہے۔ صدر ولادومیر زیلنیسکی کا کہنا ہے یوکرائن کو اپنے دفاع کے لیے ‘تن تنہا چھوڑ دیا گیا ہے۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق یوکرائنی صدر نے روس کے خلاف مزاحمت جاری رکھنے کے عزم کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اب روس اور مغرب کے درمیان ”ایک نیا آہنی پردہ” گر چکا ہے۔

 

واضح رہے کہ صدر زیلنیسکی نے روس کی طرف سے بھر پور حملے کے فورا بعد مارشل لا نافذ کرنے کا اعلان کر دیا تھا۔یوکرائن کے صدر زیلنیسکی نے اعلان کیا ہے کہ روس کے حملے کے بعد سے فوجی اہلکاروں سمیت اب تک مجموعی طور پر 137 افراد ہلاک اور 300 سے زیادہ زخمی ہو چکے ہیں۔ انہوں نے اپنے ویڈیو خطاب میں متاثرین کو ‘ہیرو قرار دیا۔ زیلنیسکی نے کہا کہ روس کے اس دعوے کے برخلاف کہ وہ صرف فوجی اہداف پر حملہ کر رہا ہے، سویلین مقامات کو بھی نشانہ بنایا گیا ہے۔ انہوں نے کہا، ”وہ لوگوں کو مار رہے ہیں اور پرامن شہروں کو بھی فوجی اہداف میں تبدیل کر رہے ہیں۔ یہ گندی بات ہے اور اسے کبھی معاف نہیں کیا جائے گا۔”

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

شاہد کپور کی سالگرہ ٹوئٹر پر ٹاپ ٹرینڈ بن گئی

پڑھنے کے اگلے

بیٹی نے سر فخر سے بلند کردیا ہے،عطا اللہ عیسیٰ خیلوی

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔