PK Press

پیکا ترمیمی آرڈیننس واپس لیں، وفاقی وزیرامین الحق کا وزیراعظم عمران خان کو خط

وفاقی وزیر آئی ٹی سید امین الحق نے متنازعہ پیکا ترمیمی آرڈیننس پر وزیراعظم عمران خان کو خط ارسال کردیا۔تفصیلات کے مطابق بدھ کو وفاقی وزیر امین الحق کی جانب سے لکھے گئے خط میں ترمیمی آرڈیننس واپس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے حکومت کی اتحادی جماعت ایم کیو ایم کے وزیر کا کہنا تھا کہ وہ متنازع آرڈیننس کے ذریعے پیکا قانون میں ترامیم سے متفق نہیں کیونکہ اس میں متعلقہ سٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں نہیں لیا گیا۔ایم کیوایم کی اندازسیاست میں بنیادی حقوق کیخلاف قوانین کی حمایت کسی صورت نہیں کرسکتے،ترمیمی آرڈیننس حکومت کی عوامی حمایت کیلئے خطرہ اور آزادی اظہار رائے کے خلاف ہے،

خط کی کاپی کے مطابق وفاقی وزیر امین الحق نے وزیراعظم سے کہا ہے کہ پیکا آرڈیننس کے خلاف میڈیا اور دیگر سٹییک ہولڈرز کے احتجاج پر غور کریں اور فوری طور پر میڈیا اور دیگر متعلقہ حلقوں سے وسیع البنیاد مشاورت کا آغاز کریں۔

 

https://pkpress.net/2022/02/23/peca-ordinance/

وفاقی وزیر آئی ٹی سید امین الحق نے کہا کہ ترامیم میں بلاضمانت گرفتاری اور فیک نیوز کی تشریح نہ ہونے سے ملک میں بے چینی پھیل رہی ہے۔ اس حوالے سے صحافتی تنظیموں، انسانی حقوق تنظیموں و ماہرین کی رائے لی جاتی تو بہتر ترامیم ہو سکتی تھیں۔ صحافت ریاست کا چوتھا ستون ہے، ہر حکومت میڈیا سے اپنے تعلقات بہتر بناتی ہے مگر اس ترمیمی آرڈیننس کی وجہ سے صحافی و صحافتی اور میڈیا تنظیمیں حکومت کے خلاف ہو رہی ہیں۔
وفاقی وزیر آئی ٹی سید امین الحق نے خط میں وزیراعظم عمران خان کو آگاہ کیا کہ بغیر مشاورت کیے جاری آرڈیننس کے خلاف صحافتی و میڈیا تنظیموں نے احتجاج کا اعلان کیا ہے۔
ان کا کہنا تھا کہ ہم حکومت کے اتحادی ہیں لیکن عوام کے بنیادی حقوق کے لیے جدوجہد کرنے والی تنظیم سے تعلق اہم ہے۔ ایم کیوایم کی انداز سیاست میں بنیادی حقوق کے خلاف قوانین کی حمایت کسی صورت نہیں کر سکتے۔
انہوں نے کہا کہ ترمیمی آرڈیننس حکومت کی عوامی حمایت کے لیے خطرہ اور آزادی اظہار رائے کے خلاف ہے۔ وزیراعظم سے امید ہے کہ وہ صحافتی تنظیموں اور سٹیک ہولڈرز سے مشاورت کے بعد نئی ترامیم کریں گے۔

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

پیکا قانون کے سیکشن 20 کے تحت کسی کو گرفتار نہ کیا جائے

پڑھنے کے اگلے

وزیراعلی بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو کورونا وائرس کا شکار

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔