PK Press

اپوزیشن تحریک عدم اعتماد لائے ، حکومت مکمل تیار ہے، فوادچوہدری

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین نے کہا ہے کہ چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ جسٹس اطہر من اللہ نے ایف بی آر کے کیسز کے حوالے سے پاکستان کی خوشحالی کی طرف قدم اٹھایا ہے اور حکومت اس اقدام کو سراہتی ہے،

 

اجلاس میں ایف بی آر کے کیسز کے حوالے سے تفصیلی گفتگو کی گئی اور چیف جسٹس نے زیر التواء کیسز کے حوالے سے مشورے دیئے، وفاقی حکومت اپوزیشن کی جانب سے تحریک عدم اعتماد کے حوالے سے مکمل تیار ہے مگر لگتا ہے کہ اپوزیشن تحریک عدم اعتماد نہیں لا سکتی۔

 

منگل کو چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ جسٹس اطہر من اللہ کے زیر صدارت اعلیٰ سطحی اجلاس ہوا جس میں وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین کہ چیئرمین ایف بی آر اور دیگر نے بھی شرکت کی ۔ اجلاس میں ، ایف بی آر کے کیسز کے حوالے سے تفصیلی گفتگو کی گئی۔ اجلاس میں شرکت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات و

 

نشریات چوہدری فواد حسین نے کہا کہ چیئرمین ایف بی آر اور میں نے آج چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ اطہر من اللہ سے ملاقات کی۔ملاقات میں اچھا ماحول رہا، ایف بی آر کے کیسز کے حوالے سے تفصیلی گفتگو کی گئی اور چیف جسٹس نے زیر التواء کیسز کے حوالے سے مشورے دیئے۔

 

انہوں نے کہا کہ ہائی کورٹ میں 233ارب روپے کے مقدمات زیر التواء ہیں اور یہ پیسہ ملک کا ہے کسی فرد کا نہیں، ملاقات میں چیئرمین ایف بی آر نے 13مقدمات کو زیادہ اہم قرار دیا۔ فواد چوہدری نے کہا کہ چیف جسٹس اطہر من اللہ نے پاکستان کی خوشحالی کی طرف قدم اٹھایا ہے اور حکومت اس اقدام کو سراہتی ہے، امید کرتے ہیں کہ باقی کورٹس بھی اسلام آباد ہائیکورٹ کی پیروی کرتے ہوئے آگے آئیں گے۔

 

انہوں نے کہا کہ ملاقات میں متبادل تجاویز پر بھی غور کیا گیا۔فواد چوہدری نے کہا کہ ملک میں کوئی ایسا فورم ہونا چاہیے جہاں حکومت اور عدلیہ کے درمیان کوئی رابطہ ہو، آج چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ نے وہ فورم مہیا کیا ہے جس میں بہت سی باتیں ہوئیں، یقینی طور پر چیئرمین ایف بی آر آج کے اجلاس میں چیف جسٹس کی جانب سے دی گئی تجاویز سے استفادہ کریں گے، اور ایف بی آر کے وہ کیسز جو تکنیکی بنیادوں پر پھنسے ہوئے ہیں اس میں مثبت پیش رفت ہو گی۔

 

فواد چوہدری نے صحافی کے سوال پر کہا کہ وفاقی حکومت اپوزیشن کی جانب سے تحریک عدم اعتماد کے حوالے سے مکمل تیار ہے اگر لگتا ہے کہ اپوزیشن تحریک عدم اعتماد نہیں لا سکتی۔ قبل ازیں چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ کی زیر صدارت ٹیکس کیسز سے متعلق اجلاس ہوا،

 

اجلاس میں وفاقی وزیر اطلاعات، چیئرمین ایف بی آر، اٹارنی جنرل ،چیئرمین مسابقتی کمیشن اور چیئرمین اوگرا نے شرکت کی۔اجلاس میںچیف جسٹس اطہر من اللہ نے ہائیکورٹ میں زیر التوا ٹیکس کیسز کی تفصیل بھی طلب کیں تھیں

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

آئندہ بلدیاتی انتخابات میں نوجوانوں کو موقع دیں گے ،مصطفی ملک

پڑھنے کے اگلے

رحمان ملک سرکاری ملازم سے بینظیر بھٹو کے قریبی ساتھی کیسے بنے؟

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔