PK Press

چینی محققین نے چاند کے تقویمی ماڈل کو اپ ڈیٹ کردیا

Chinese researchers update lunar chronology model

چینی محققین نے چاند اور سیاروں کی تحقیق کے لیے ان کی عمر کا زیادہ درست اندازہ لگانے کے لیے سب سے زیادہ استعمال ہونے والے تقویمی ماڈل کو اپ ڈیٹ کیا ہے۔

چاند اور سیاروں کی تحقیق کے لیے ان کی عمر کا زیادہ درست اندازہ
جریدے نیچر فلکیات میں حال ہی میں شائع ہونے والے ایک تحقیقی مضمون کے مطابق، قمری تقویم کے ماڈلز اپولو اور لونا مشنز کے ذریعے زمین پر لائے گئے نمونوں کی لیبارٹری میں ریڈیومیٹرک عمروں کو جوڑ کر بنایا گیا تھا۔

 

اس طرح کے ماڈلز کو چاند کے مختلف خطوں کی عمر کا تعین کرنے کے لیے وسیع پیمانے پر استعمال کیا گیا، ساتھ ہی ساتھ نظام شمسی کے اندرونی پتھریلے اجسام کی سطحوں کی عمر کا اس کے ذریعے تعین کیاجاتا رہا۔

 

تاہم، نمونوں کی گزشتہ عمروں میں پہلے کے تین ارب اور ایک ارب سال کا فرق ہے، جو چاند کی تاریخ کے تقریبا نصف دور کے برابر ہے۔چھانگ ای -5 تحقیقی مشن کے ذریعے چاند کے آتش فشانی حصے سے بیسالٹ کا مواد واپس لایا گیا جس کی ریڈیو میٹرک طریقہ سے عمر کا اندازہ تقریبا دو ارب سال لگایا گیاہے۔

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

بی آر ٹی پشاور کو بین الاقوامی گولڈ سٹینڈرڈ سروس کا درجہ مل گیا

پڑھنے کے اگلے

تہران میں عمارت گرنے سے 9 افراد جاں بحق

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔