PK Press

مونال ریسٹورنٹ سیل کرنے کیخلاف اپیل مسترد

سپریم کورٹ نے مونال ریسٹورنٹ کھولنے کا حکم دے دیا

سپریم کورٹ آف پاکستان نے مونال ریسٹورنٹ سیل کرنے کے خلاف اپیل پر سماعت کرتے ہوئے اسلام آباد ہائی کورٹ کا فیصلہ معطل کرنے کی استدعا مسترد کر دی۔

تفصیلات کے مطابق عدالتِ عظمی کے جسٹس اعجاز الاحسن کی سربراہی میں جسٹس منیب اختر اور جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی پر مشتمل 3 رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کرتے ہوئے وفاقی حکومت اور فریقین کو نوٹس جاری کر دیے۔

http://pkpress.net/2022/02/02/umar-ata-bandial-cjp1/

مونال کے وکیل مخدوم علی خان نے عدالت کو بتایا کہ سی ڈی اے نے تحریری حکم سے پہلے ہی مونال کو سیل کر دیا۔جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ جو کچھ ہو چکا ہے اسے فی الحال واپس نہیں کر سکتے۔مونال کے وکیل نے کہا کہ سی ڈی اے اور مونال کا تنازع سول عدالت میں زیرِ التوا ہے، اسلام آباد ہائی کورٹ نے مقدمہ زیرِ التوا ہونے کے باوجود فیصلہ سنا دیا۔جسٹس مظاہر نقوی نے استفسار کیا کہ کیا اسلام آباد ہائی کورٹ نے مروجہ طریقہ کار سے ہٹ کر فیصلہ کیا ہے؟مونال کے وکیل نے بتایا کہ شواہد ریکارڈ کیے بغیر ہی اسلام آباد ہائی کورٹ نے فیصلہ جاری کیا،

مونال ریسٹورنٹ تو کیس میں فریق ہی نہیں تھا، ہائی کورٹ نے سوموٹو لیتے ہوئے مونال کو

سیل کرنے کا حکم دیا، مونال سیل کرنے کی استدعا کسی درخواست گزار نے نہیں کی تھی۔

سپریم کورٹ آف پاکستان

واضح رہے کہ گزشتہ روز سپریم کورٹ آف پاکستان نے نیشنل پارک (مارگلہ ہلز)پر تعمیر کیے گئے مونال ریسٹورنٹ کو سیل کرنے کے اسلام آباد ہائی کورٹ کے حکم کے خلاف دائر اپیل کی سماعت کے دوران اپیل گزار کے وکیل کی استدعا منظور کرتے ہوئے متعلقہ آفس کو کیس کا نمبر لگانے کی ہدایت کرتے ہوئے مزید سماعت آج تک ملتوی کی تھی۔

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

کشور کمار اور بپی لہری کا آپس میں کیا رشتہ تھا؟

پڑھنے کے اگلے

فیصل واوڈا کی تاحیات نااہلی کیخلاف درخواست کے قابل سماعت ہونے پر فیصلہ محفوظ

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔