PK Press

عدالت نے قندیل بلوچ قتل میں مرکزی ملزم وسیم بری کردیا

لاہور ہائیکورٹ ملتان بینچ نے قندیل بلوچ قتل کیس میں مرکزی ملزم وسیم کو سزا سے بری کردیا۔تفصیلات کے مطابق جسٹس سہیل ناصر نے راضی نامہ کی بنیاد اور گواہوں کے بیانات سے منحرف ہونے پر ملزم کو بری کیا۔ ملزم وسیم کو 27 ستمبر 2019 کو ملتان کی ماڈل کورٹ نے عمر قید کی سزا سنائی تھی۔ ہائیکورٹ ملتان بینچ میں ملزم کی والدہ نے راضی نامہ کا بیان حلفی جمع کروایا۔وکیل درخواست گزار نے عدالت کو بتایا کہ سیشن عدالت نے راضی نامہ کو نظر انداز کر دیا تھا۔ مدعی مقدمہ ملزم اور مقتولہ کا والد وفات پا چکا ہے۔ مقدمہ کے گواہان بھی ٹرائل کورٹ میں اپنے بیانات سے منحرف ہو گئے تھے۔ملزم کے خلاف اپنی بہن ماڈل قندیل بلوچ کا گلہ دبا کر غیرت کے نام پر قتل کرنے کا الزام ہے۔ ملزم وسیم نے عدالت میں سزا منسوخی کی اپیل دائر کر رکھی ہے ۔مقتولہ کے دو بھائی سمیت 5 ملزمان بری ہوچکے ہیں۔ بری ہونیوالوں میں معروف مذہبی سکالر مفتی عبدالقوی بھی شامل تھے۔

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

وفاقی وزیر طارق بشیر چیمہ سے سعودی سفیر سفیر نواف بن سعید المالکی کی ملاقات

پڑھنے کے اگلے

ویلنٹائن ڈے کی تاریخ کیا ہے اور پاکستان میں یومِ حیا کی بنیاد کس نے رکھی ؟

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔