PK Press

حکومت ٹیکس لگاتے وقت غریب آدمی کے بارے میں سوچے، چودھری شجاعت حسین

ch shujat hussain

ch shujat hussain

پاکستان مسلم لیگ کے صدرو سابق وزیراعظم چودھری شجاعت حسین نے کہا ہے کہ تمام پارٹی کے لیڈروں سے ملاقاتیں ہو رہی ہیں سب سے میری ایک ہی گزارش ہے کہ سیاسی معاملات صرف میٹنگز کی حد تک ہی نہ رکھیں بلکہ سب مل کر عوام کیلئے ایک ایسا منصوبہ بنائیں جس سے عوام کو فائدہ ہو۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو بھی غریبوں کی بہتری کیلئے عملی اقدامات کرنے چاہئیں، حکومت نے حال ہی میں نئے ٹیکس لگائے ہیں، اس میں کوئی شک نہیں کہ حکومت کیلئے ٹیکس لگانا معمول کی بات ہے مگر ٹیکس لگاتے وقت عام اور غریب آدمی کے استعمال میں آنے والی چیزوں کے بارے میں بھی سوچنا چاہئے، دالیں، بچوں کا دودھ، لائف سیونگ ادویات اور دیگر روز مرہ کی ضروری اشیا کو جی ایس ٹی سے نکال دینا چاہئے تاکہ عوام کو ریلیف مل سکے۔ چودھری شجاعت حسین نے کہا کہ سیاسی جماعتوں کی پالیسیاں عوام پر اثرانداز ہوتی ہیں، سیاسی جماعتوں کو عوامی مسائل کی نشاندہی اور ان کے حل کیلئے عملی منصوبے بنانا ہوں گے۔ انہوں نے مثال دیتے ہوئے کہا کہ حکومت کے اختیار میں ہے کہ دالوں، دودھ اور روزمرہ اشیا پر جی ایس ٹی واپس لے، بزنس مین اور دکاندار اپنی اشیا کی قیمتیں جی ایس ٹی کے کھاتے میں ڈال کر سرخرو ہو جاتے ہیں جبکہ تنخواہ دار طبقہ خود اپنی تنخواہ نہیں بڑھا سکتا، ایسے طبقے کا خیال حکومت کو رکھنا ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو ایسے اقدامات کرنے چاہئیںجس سے عام اور غریب آدمی کو فائدہ پہنچے۔

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

وفاقی وزیر انسداد منشیات اعجاز احمد شاہ کا اپنی وزارت کی کارکردگی پر اظہار اطمینان

پڑھنے کے اگلے

بلاول کے استاد نالائق ہیں، لکھی ہوئی پرچیاں دی جاتی ہیں، شاہ محمود قریشی

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔