PK Press

دوسروں پر بے بنیاد الزامات لگانے والوں کو عالمی ادارے چور قرار دے رہے ہیں: شہبازشریف

shahbaz sharif

shahbaz sharif

 مسلم لیگ (ن)کے صدر اور اپوزیشن لیڈر شہبازشریف نے کہا ہے کہ کرپشن کرپشن کا شور مچانے والوں کی ہر روز چوریاں پکڑی جا رہی ہیں اور دوسروں پر بے بنیاد الزامات لگانے والوں کو عالمی ادارے چور اور کرپٹ قرار دے رہے ہیں۔تفصیلات کے مطابق پاکستان میں کرپشن میں اضافے کی ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ پر رد عمل دیتے ہوئے شہباز شریف نے کہا کہ ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل نے دوسری بار گواہی دی کہ عمران نیازی حکومت کرپٹ اورچور ہے، عالمی ادارے کی رپورٹ فرد جرم ہے لہذا کرپٹ حکمران استعفیٰ دیں کیونکہ ملک ان کی لوٹ مار کا متحمل نہیں ہو سکتا۔انہوں نے کہا کہ عمران نیازی کی وزارت عظمی میں پاکستان کرپشن میں تیزی سے ترقی کررہا ہے، دنیا کہہ رہی ہے کہ وزیراعظم چور ہے، کرپشن کے عالمی انڈیکس میں پاکستان کا 16 درجے مزید نیچے جانا افسوسناک ہے، دکھ ہے کہ عالمی سطح پر ملک کی بدنامی ہوئی۔شہباز شریف نے کہا کہ نوازشریف کی ایمان دار اور اہل قیادت میں پاکستان میں کرپشن میں کمی آئی تھی، ہماری گڈ گورننس، شفافیت اور اصلاحات سیکرپشن انڈیکس میں رینکنگ 23 درجے بہتر ہوئی تھی، افسوس موجودہ کرپٹ ٹولے نے ساری محنت ضائع کر دی۔انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ نون کے دور میں پاکستان کی رینکنگ بہتر ہوکر 117 پر آگئی تھی اور رینکنگ بہتر ہونے سے عالمی سطح پر پاکستان کی عزت میں اضافہ ہوا تھا، اب ہرشعبے میں کرپشن ہوگی تو پاکستان کرپشن انڈیکس میں 124 سے 140 پر کیوں نہیں جائے گا، کرپشن کرپشن کا شور مچانے والوں کی ہر روز چوریاں پکڑی جا رہی ہیں، دوسروں پر بے بنیاد الزامات لگانے والوں کو عالمی ادارے چور اور کرپٹ قرار دے رہے ہیں، 2019 سے 2021 تک ہر سال پی ٹی آئی کے دور میں پاکستان میں کرپشن بڑھی جب کہ ہمارے دور میں ہر سال کرپشن میں کمی واقع ہوئی۔شہباز شریف نے مزید کہا کہ اگر وزیراعظم اور اس کی ٹیم ایماندار ہو تو اس کااثر نیچے نظر آتا ہے، ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ اس امر کا واضح ثبوت ہے، کبھی ایسا نہیں ہوا کہ پاکستان کرپشن میں 14 ممالک سے نیچے چلا گیا ہو۔

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

اسلام آباد میں کورونا کیسز کی شرح میں تشویشناک حد تک اضافہ

پڑھنے کے اگلے

پاکستان کرپشن رینکنگ میں 16درجے اوپر چلا گیا،ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل رپورٹ

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔