PK Press

پانی کی کمی : برطانوی ہائی کمشنر نے پاکستان کیلئے خطرے کی گھنٹی بجادی

Christian Turner

Christian Turner

اسلام آباد ، برطانوی ہائی کمشنر ڈاکٹر کرسچن ٹرنر نے خبردار نے کیا ہے کہ آئندہ دس برس میں سندھ طاس کوپانی میں 20 فیصد کمی کا سامنا ہوگا۔تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں برطانوی ہائی کمشنر ڈاکٹر کرسچن ٹرنر نے مارگلہ ڈائیلاگزسے خطاب کرتے ہوئے کہا مسائل کے حل میں ناکامی کے بعد ہم مسائل کو عالمی بنا دیتے ہیں، پاکستان کو اپنی تیزی سے بڑھتی آبادی کی جانب توجہ دینی ہو گی۔برطانوی ہائی کمشنر نے کہا کہ آئندہ 10 برس میں سندھ طاس کوپانی میں 20 فیصد کمی کا سامنا ہوگا، پاکستان موسمیاتی تبدیلیوں سے سب سیزیادہ متاثر ممالک میں شامل ہے۔افغانستان کے حوالے سے کرسچن ٹرنر نے کہا کہ شاہ محمود کی جیو پالیٹکس سے جیواکنامکس پالیسی کی شفٹ سے اختلاف نہیں ، افغانستان پر ہمارے اہداف مشترکہ ہیں، شراکت داروں کیساتھ افغانستان میں اہداف کے حصول کی کوشش ہے۔انہوں نے کہا کہ ایک مستحکم اور کثیر الجہتی افغانستان ہی ہمارا ہدف ہے، افغانستان میں کیش اور بینکوں کے کام نہ کرنے سے مسائل کاسامنا ہے، افغانستان کے امریکاکی جانب سے منجمداثاثہ جات بڑا چیلنج ہے۔برطانوی ہائی کمشنر نے کہا کہ پاک بھارت تنا ؤمیں کمی بیحدضروری ہے، دونوں ممالک میں تناکسی کے حق میں نہیں ہو گا، کشمیر کا مسئلہ بات چیت اورعوام کی خواہشات کے مطابق حل کرنا بہتر ہے۔

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

پاکستان کی پہلی قومی بھنگ پالیسی تیارکرلی گئی

پڑھنے کے اگلے

لبنیٰ قریشی اور ماجد مکیانہ کے مابین اہم ملاقات ،سیاسی صورتحال پر گفتگو

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔