PK Press

متحدہ اپوزیشن کا پارلیمانی قومی سلامتی کمیٹی کی ان کیمرہ بریفنگ کے بائیکاٹ کا فیصلہ

opposition

opposition

اسلام آباد،متحدہ اپوزیشن نے پارلیمانی قومی سلامتی کمیٹی کی ان کیمرہ بریفنگ کے بائیکاٹ کا فیصلہ کرلیا، پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں اہم بلز کو بلڈوز کرنے کے حکومتی رویئے کی بنا پر بریفنگ کے بائیکاٹ کا فیصلہ کیا گیا ۔اپوزیشن کی جانب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا کہ انتہائی افسوسناک ہے کہ حکومت پارلیمان کو ربڑسٹیمپ کے طور پر استعمال کرنے کا وطیرہ اپنائے ہوئے ہیں ،اپوزیشن نے آئین، قانون، قومی سلامتی، عوامی اہمیت کے حامل تمام امور پرہمیشہ نہایت ذمہ دارانہ اورسنجیدہ قومی طرزعمل کا مظاہرہ کیا ہے۔اعلامیے میں کہا گیا کہ پارلیمان کے اہم داخلی و خارجی ، قومی و عوامی مسائل پر پارلیمان کو مسلسل نظر انداز کر کے اِن۔کیمرہ بریفنگ سے معاملات کو چلایا جا رہا ہے، حذب اختلاف کا متفقہ فیصلہ ہے کہ اِن۔کیمرہ بریفنگ کا بائیکاٹ کیا جائے۔خیال رہے حکومت نے 6 دسمبر کو پارلیمانی قومی سلامتی کمیٹی کا ان کیمرہ اجلاس طلب کررکھا ہے جس میں قومی سلامتی کے مشیر معید یوسف بریفنگ دیں گے۔

براہ کرم ہمیں فالو اور لائک کریں:

پڑھنے کے پچھلے

پاکستان میں کورونا کیسز اور اموات میں کمی کا سلسلہ جاری

پڑھنے کے اگلے

چیئرمین سینیٹ سے کرغستان اور قازقستان کے سفرا کی ملاقاتیں

ایک جواب دیں چھوڑ دو

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔